دنیا بھر کے مہذب معاشروں میں یہ روایت ہے کہ مذہبی یا ثقافتی تہواروں کی آمد سے پہلے روزمرہ ضروریات کی چیزیں اور اشیائے خوردو نوش کی عمومی قیمتوں میں کمی کردی جاتی ہے۔ جس کا مقصد معاشرے کے تمام طبقات خاص طور پر غریب طبقے کو سہولت دینا ہوتا ہے۔ بدقسمتی سے ہم پاکستانی اس عام مگر اہم معاشرتی رویئے سے محروم ہیں ۔ رمضان کی آمد کے ساتھ ہی ملک بھر میں اشیائے خوردنوش خاص طور پر مہنگی کردی جاتی ہیں۔ زیادہ منافع کمانے کی یہ حرص غریب طبقے پر کس قدر مشکل گزرتی ہے اس کا اندازہ صرف وہی کرسکتے ہیں ۔ تاہم پشاور کے قریب جمرود بازار میں ایک سکھ دکاندار رمضان میں وہی رعایت کررہا ہے جو تمام مہذب معاشروں کی روایت ہے۔ ہمارے ساتھی مدثر شاہ نے جمرود بازار میں نرنجن سنگھ اور ان کے بیٹے گرمیت سنگھ سے ملاقات کی اور پاکستان ساگا کے ناظرین کے لئے یہ رپورٹ بھیجی ہے۔

(26)

پشاور کے قریب جمرود بازار کا مہذب سکھ دکاندار

ساگا ویڈیوز |
About The Author
-