ملتان کے کرافٹ بازارمیں ہنرمندوں کی کمی نہیں ان کی تیاردہ کڑھائی اور تلے والا ملتانی کھسہ ، خواتین کے ملبوسات اور بیڈ شیٹس پر کروشیہ اور سانچہ بنانے کے لئے فن اوکیر سازی ، ملتان کی پہچان بلیو پاٹری ، اونٹ کی کھال کے لیمپ شیڈز پر باریک نقش و نگار بنانا اور اس میں رنگ بھرنا جیسا فن دیکھ کر سیاح بہت متاثر ہوتے ہیں ،ایسے ہنرمندوں کی بیرونی ممالک میں توبہت مقبولیت ہے مگرپاکستان میں انہیں وہ پذیرائی نہیں مل سکی جس کے وہ حقدار ہیں یہی وجہ ہے کہ نسل در نسل کام کرنے والے خاندان اب یہ فن اپنی اولاد میں منتقل نہیں کر رہے۔ مزیو بتا رہی  ہیں پاکستان ساگا سے میمونہ ملک اپنی رہورٹ میں۔۔۔۔۔

(3194)

ملتان کوکرافٹ یونیورسٹی کی ضرورت کیوں ہے

ساگا ویڈیوز |
About The Author
-