سال ۲۰۱۳ میں پشاور کا کوہاٹی بازار چرچ خود کش حملے کا نشانہ بنا تاتھا جس میں اسی سے زائد معصوم شہری مارے گئے تھے ۔ اس دھماکے میں جاں بحق ہونےوالوں کے لواحقین آج بھی اپنے پیاروں کی یاد میں تڑپ رہے ہیں ۔ ایک معصوم بچہ جس کے والدین اس دھماکے کی نذر ہوئے ابھی تک اس صدمے سے نہیں نکلا ۔ پشاور کی مسیحی برادری سے تعلق رکھنےوالے حقوق انسانی کےایک کارکن بتاتے ہیں کہ مسیحی برادری پر ہوئے اس ظالمانہ حملے کے واقعے کے بعد اکثریتی مسلم برادری اور دیگر اقلیتی برادریوں کی بروقت معاونت اور ہمدردی ہم ہمیشہ یاد رکھیں گے۔ دشمن نے اس حملے کے ذریعے ہمیں تقسیم کرنے کی کوشش کی مگر وہ ناکام رہا۔ پشاور سے ہماری ساتھی ثمر خان نے پاکستان ساگا کے لئے یہ رپورٹ بھیجی ہے۔

(2)

پشاور کے کوہاٹی بازار چرچ بم دھماکے کی دکھ بھری داستا ن

ساگا ویڈیوز |
About The Author
-